آپ يہاں ہیں
ہوم > اہم خبریں > کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ اور سربراہ نیشنل کانفرنس فاروق عبداللہ نے بھارتی حکومت کو خبردار کردیا۔

کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ اور سربراہ نیشنل کانفرنس فاروق عبداللہ نے بھارتی حکومت کو خبردار کردیا۔

کشمیر کے سابق کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ اور سربراہ نیشنل کانفرنس فاروق عبداللہ نے بھارتی میڈیا کو دیئے گئے ایک تازہ انٹرویو میں انہوں نے سری نگر میں جاری ضمنی انتخابات کے دوران تشدد اور قتل و غارت گری پر شدید غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے اس کا ذمہ دار مودی سرکار کو ٹھہرایا ہے۔

ماضی میں مقبوضہ کشمیر کے ’’کٹھ پتلی وزیر اعلی‘‘ کی حیثیت سے شہرت رکھنے اور بھارتی حکومت کے ظالمانہ اقدامات کی تائید کرنے والے ڈاکٹر فاروق عبداللہ سری نگر سے حالیہ ضمنی انتخابات میں حصہ لے رہے ہیں۔
یہ خبر بھی پڑھیں: بشار الاسد کی موجودگی میں مستحکم اور پرامن شام کا تصور بھی نا ممکن ہے، امریکا
انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ مودی سرکار آگ سے کھیل رہی ہے کیونکہ پتھراؤ کرنے والے کشمیری نوجوان کسی عہدے یا وزارت کے طلبگارنہیں بلکہ وہ بھارتی مظالم کے خلاف لڑ رہے ہیں کیونکہ بھارتی حکومت نے ان سے ہر طرح کی آزادی چھین لی ہے اور وہ آزادی کےلیے ہی لڑ رہے ہیں۔
انہوں نے مودی کو خبردار کرتے ہوئے کہا، ’’دلی سرکار ہوش کے ناخن لے اس سے پہلے کہ بہت دیر ہوجائے اور بچا کچھا کشمیر بھی پاکستان کے ساتھ شامل ہوجائے۔‘‘

جواب دیں

Top