آپ يہاں ہیں
ہوم > بین لاقوامی > برطانوی وزیر اعظم نے یورپی یونین سے علیحدگی کے خط پر دستخط کردیے

برطانوی وزیر اعظم نے یورپی یونین سے علیحدگی کے خط پر دستخط کردیے

english PM

برطانوی میڈیا کے مطابق برطانوی وزیر اعظم تھریسامے نے یورپی یونین سے علیحدگی کے خط دستخط کر دیے ہیں جس کے بعد برطانیہ کا یورپی یونین سے نکلنے کا عمل باضابطہ طور پر شروع ہو جائے گا۔یہ خط برطانوی سفیر نے یورپین کونسل کے صدر ڈونلڈکسک کے حوالے بھی کردیا ہے۔خط موصول ہونے کے بعد بر طانیہ کی یورپی یونین سے علیحدگی پر باقاعدہ طور پر عملدرامد شروع ہوگیا ہے۔برطانیہ کی جانب سے علیحدگی کے خط کی کاپیاں پوری یورپی یونین کے دیگر 27 ممالک کو بھی بھیج دی گئی ہیں۔
وزیر اعظم تھریسامے کا کابینہ کے اجلاس کی صدارت میں اراکین پارلیمنٹ کو اس بارے میں اگاہ بھی کیا۔جبکہ برطانوی پارلیمنٹ کے ہاؤس آف لارڈز اور ہاؤس آف کامنز پہلے سے ہی بریگزٹ بل کی منظوری دے چکے ہیں اور ملکہ برطانیہ دوم نے بھی اس بل پر دستخط کردیے تھے جس کے بعد یہ بل قانونی شکل اختیار کرگیا تھا۔
یہ خبر بھی پڑھیں: ٹرمپ حکومت کا سفری پابندیوں کا نیا حکم نامہ بھی غیر معینہ مدت تک معطل
2007 میںیورپی یونین کا آرٹیکل 50 منظور کیا گیا۔جو رکن ممالک کو یہ اجازت دیتا ہے کہ وہ قانونی طور پر یورپی یونین سے علیحدہ ہو سکتے ہیں اس سے قبل رکن ممالک کو علیحدگی کا یہ اختیار نہ تھا۔
واضح رہے کہ برطانوی عوام نے جون 2016میںیورپی یونین سے علیحدگی کے حق میں ووٹ دیا تھا۔اور اب اس عمل کا باقاعدہ آغاز ہو چکا ہے اور مارچ 2019میں برطانیہ با ضابطہ طور پر یورپی یونین سے الگ ہو جائے گا۔

جواب دیں

Top